وطن کے اے جان نثاروں
یہ وطن پہ ہے قرض تمہارا 
جو تم نے واری جانیں اپنی
رہے گا روشن یہ نام تمہارا
اپنے خون سے جلا کے دیے 
بلند ہے رکھا پرچم ہمارا
سلام تم پر اےچاند تاروں
تم ہی سے چلتا نام ہمارا
آیا دسمبر یادوں کو لیکر
یہ دن تمہارا وطن تمہارا

شاعرہ: عائشہ یاسین

Facebook Comments