آج یہ نفس پھر سے مرنے والا ہے
وہ ماہِ مبارک پھر سے آنے والا ہے
مسلمان پھر سے روزے رکھ کر
عبادت کا شوق کمانے والا ہے
ہم غرباءمیں کھانا بانٹیں گے
وہ رب ہے پاک ہمت دینے والا ہے
مفلس بھی یہ عید منائیں گے
اک معجزہ برپا ہونے والا ہے
اونچ نیچ کے رنگ اب بکھریں گے
بھائی چارے کا رنگ نکھرنے والا ہے
بھوک میں جل کر کندن بنے گا
نفس بھی پاکیزہ ہونے والا ہے
سن لے یا ربِ کریم یہ دعا فاطی
کامل بنا دے تو کامل بنانے والا ہے

Facebook Comments